#ffffff#81d742#eeee22

مرکزی خیال ماخوذ نظمیں

گدھے کی دانش مندی

گدھے کی دانش مندی

 

(مرکزی خیال، ماخوذ)

 

ارشاد عرشی ؔملک اسلام آباد

 

اِک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک دہقاں کا گدھا

شُومئیِ قسمت سے اِک گہرے کنویں میں گر گیا

وہ بہت گھبرا گیا رہ رہ کے چِلانے لگا

ڈھینچوں ڈھینچوں کر کے دل مالک کا دہلانے لگا

گو محبت تھی بہت دہقان کو اس سے مگر

اس کو باہر کھینچ […]

Rate: 0

سیب کا پیڑ اور لڑکا

سیب کا پیڑ اور لڑکا

 

(مرکزی خیال ایک چینی کہانی سے ماخوذ)

ارشاد عرشیؔ ملک اسلام آباد

arshimalik50@hotmail.com

 

جنگل میں اک پیڑ لدا تھا سیبوں سے

اک بھولا معصوم سا لڑکا اس سے کھیلا کرتا تھا

پیڑ پہ چڑھنا اور اترنا اس کو اچھا لگتا تھا

سیبوں کو ہر روز کُترنا اس کو اچھا لگتا تھا

اس کو پیڑ سے،پیڑ کو اس […]

Rate: 0

ریت پر قدموں کے نشاں

ریت پر قدموں کے نشاں

 

(مرکزی خیال  ،  انگریزی ادب سے ماخوذ)

 

ارشاد عرشیؔ ملک اسلام آباد

arshimalik50@hotmail.com

 

یاد میں اللہ کی رو رو کے سوئی ایک شب

رات کے پچھلے پہر اک خواب پھر دیکھا عجب

ریگِ ساحل پر چلی جاتی تھی میں

اور میرے ساتھ تھا میرا خدا

مثلِ یارِ مہربان و آشنا

میں چلی ہمراہ اس کے دور تک

اک تجلی […]

Rate: 0

روز کا منظر

روز کا منظر

(مرکزی خیال ماخوذ)

ارشاد عرشی ملک اسلام آباد

arshimalik50@hotmail.com

ہم نے مانا اس جہاں کی لذتیں ہیں بے مثال

پر انہیں کی تہہ میں ہے عرشیؔ چھپا رنج و ملال

 

دفعتاً آہوں میں کھو جاتے ہیں سارے قہقہے

موت کی بانہوں میں سو جاتے ہیں سارے چہچہے

 

راز اس کا میں بیاں کرتی ہوں اِک تمثیل سے

بات اِس عنوان […]

Rate: 0

خُدا کی کشیدہ کاری

خدا کی کشیدہ کاری

 

ارشاد عرشی ؔ ملک

arshimalik50@hotmail.com

 

یاد ہیں بچپن کے دن جب کام پر جاتی تھی ماں

 

اور میرے دن گذرتے تھے مری دادی کے ساتھ

 

دیکھتی تھی ہاتھ میں دادی کے لکڑی کا فریم

 

جس پہ وہ کپڑا چڑھاتی تھی بڑی ہی چاہ سے

 

کاڑھتی رہتی تھی ہر پل کچھ نہ کچھ

 

دائیں جانب میز پر تھی ٹوکری […]

Rate: 0