#ffffff#81d742#eeee22

مذہب کے نام پر ہونے والے مظالم کے بارے میں نظمیں

ہم چُپ رہے

وہ جو قاتل تھے ،جنونی تھے ،بہت بے رحم تھے

جب گلی کوچوں میں اپنے آگھسے

ہم   چُپ رہے

ہم پڑھے لکھے تھے ،دانشمند تھے،پُر امن تھے

کس لئے پھر بولتے

ہم   چُپ رہے

…………………

ہندوںپر سندھ میں حملے ہوئے

مندروں میں خون کے چھینٹے اُڑے

ہم   چُپ رہے

ہم مسلماں لوگ تھے ہندو  نہ تھے، بے وجہ کیوں بولتے

ہم   چُپ رہے

……………………

پھر عیسائی بستیوں […]

Rate: 0

شا نوں پر سر محفوظ نہیں

  پاکستان  کے  موجودہ  حالات  پر  ایک  نظم

 

محفوظ نہیں گھر بندوں کے، اللہ کے گھر محفوظ  نہیں

اس آگ اور خون کی ہو لی میں ، اب کو ئی بشر محفوظ نہیں

 

شعلوں کی تپش بڑھتے بڑھتے ہر آنگن تک آ پہنچی  ہے

اب پھول جھلستے جا تے  ہیں ، پیڑوں پہ  ثمر محفو ظ  نہیں

 

کل تک […]

Rate: 0

سب سے الگ

(اٹھائیس مئی ۲۰۱۰ کے سانحے کی یاد میں)

 

ارشاد عرشیؔ ملک

 

کی رقم ہم نے بھی عرشیؔ داستاں سب سے الگ

کربلا جب ہم پہ اتری ناگہاں سب سے الگ

 

چلچلاتی دوپہر،پھر خوں میں لتھڑی شام تھی

عاشقوں کا جب ہوا اک امتحاں سب سے الگ

 

ہو گئے دھندلے مری آنکھوں میں سب منظر مگر

نقش ہے لیکن وہ رقصِ بسملاں […]

Rate: 0