#ffffff#81d742#eeee22

مذہب کے نام پر ہونے والے مظالم کے بارے میں نظمیں

سوچو ذرا۔۔

( پاکستان میں ،سیلابوں ،دھماکوں،ڈاکوں،مہنگائی اور دیگر آفات کے پس منظر میں ایک درد مندانہ پیغام)

 

بد سے بد تر کس لئے حالات ہیں سوچو ذرا

کیوں مسلسل نت نئی آفات ہیں سوچو ذرا

 

کیوں طلوع ہوتا نہیں سورج تمہارے واسطے

کس لئے منحوس سے دن رات ہیں سوچو ذرا

 

تم کو کس منزل پہ لے آئے یہ ناداں […]

Rate: 0

دُور تک گئی

 ارشاد عرشی ملک

سانحہ لاہور کے بارے میں نظم

 

لاہور سے اُٹھی جو صدا دور تک گئی

عرشیؔ ہماری آہ و بُکا دور تک گئی

 

رستہ نہ اس کا روک سکے سات آسماں

مظلوم دل کی آہِ رسا دور تک گئی

 

بجلی کی طرح پھیل گئی شرق و غرب میں

اس بار بے کسوں کی نوا دور تک گئی

 

اللہ کے سوا […]

Rate: 0

پھر شہیدوں کے لہو سے داستاں لکھی گئی

پھر شہیدوں کے لہو سے داستاں لکھی گئی

(سانحہ ماڈل ٹائون اور گڑھی شاہو)

 

پھر شہیدوں کے لہو سے داستاں ،لکھی گئی

ہر ورق جس کا ہے عرشیؔ خونچکاں ، لکھی گئی

دوپہر تھی کربلا، شام ِغریباں شام تھی

مسجدوں سے جو اٹھی آہ و فغاں، لکھی گئی

گونج اٹھے گھر خدا کے گولیوں کے شور سی

پر ہوئی جو رب […]

Rate: 0

کچھ کیجئے

کچھ کیجئے

(صاحبانِ اقتدار کے نام)

 

ہر طرف ہے شورِ محشر الاماں کچھ کیجئے

ہے وطن اپنا مریضِ نیم جاں کچھ کیجئے

 

قبل اس کے پھر اُٹھے آہ و فغاں کچھ کیجئے

پھر کسی کے سر پہ ٹوٹے آسماں کچھ کیجئے

 

سانحے کچھ ہو چکے ہیں اور کچھ ہونے کو ہیں

اے امیرِ شہر ان کے درمیاں کچھ کیجئے

 

بے گناہ معصوم […]

Rate: 0

اک صدی سے ہم چپ ہیں

۲۸ مئی ۲۰۱۰ کے خونچکاں سانحے کے بعد

 

خوف  تم  کو  نہیں   ذرا   لو گو  ،  دیکھ  لو  اک  صدی  سے  ہم  چپ  ہیں

اپنی چپ بھی ہے  اک  صدا  لوگو  ،  دیکھ  لو  اک  صدی  سے  ہم  چپ  ہیں

 

پانچ   پشتوں  سے  جی  رہے   ہیں  ہم  ،  نفرتو ں  کے   سیاہ    موسم    میں

یہ  ہے  نسلوں  کا  […]

Rate: 0