مائوں  تمہارے  ہاتھ  میں  چابی  بہشت  کی

اور  کوڈ   اِس  بہشت   کا    اعمالِ   صالحہ

 

جلسہ سالانہ جرمنی میں حضورِ پُر نور کا خواتین سے تربیّتی خطاب سُنا جس میںحضور ِ انور نے فرمایا کہ جنت کی چابی مائوں کے ہاتھ میں ہے اور اس جنت ’’ کوڈ ‘‘تقویٰ اور اعمالِ

صالحہ ہیں ۔اس خطاب کا دل پر بہت اثر ہوا اللہ تعالیٰ کے خاص فضل و احسان سے یہ اشعار لکھے  گئے

ارشاد  عرؔشی  ملک

 

صالح  چلن  ہو  آپ  کا   ،   اور   چال  ِ  صالحہ

گودئوں  سے  تب  ہی  نکلیں  گے  اطفالِ  صالحہ

                          مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی                       

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

  صدیوں تمہارے  کام  کی گونجے  گی  باز  گشت

ہر  نسل  تم   سے    پائے  گی    اقبالِ   صالحہ

                         مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی                       

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

قُربِ  خدا  نصیب  میں  اس  ماں  کے  ہے ضرور

ہر   پل   جسے   نصیب    ہیں  ،  اشغالِ  صالحہ

   مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

تہذیب ِ   مغربی   کی    نہ    تقلید   تُم   کرو

پیشِ   نظر   رہیں     سدا     امثالِ      صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

ایسی   تمہاری   شان   ہو    ایسا    جلال   ہو

پردوں  میں  چُھپ  نہ  پائیں  یہ  اَجلالِ   صالحہ

                         مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی                       

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

اُن   پر  بھرے  شباب  میں  تقویٰ  کا  نور  ہے

تنہائی  میں  بھی   جن  کے  ہیں   افعا  لِ   صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

خوش   بخت  ہیں  وہ  بیٹیاں  جن  کو  نصیب  ہیں

دونوں   طرف   سے    میکہ   و  سسرالِ    صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

پگھلو   خدا  کے  عشق  میں  ہر  آن  ہر  گھڑی

برسیں  دلوں   پہ  ٹوٹ   کے   افضال  ِ   صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

روحانیت   کی  پاک   فضائو ں   میں  تم   اُڑ ئو

مل  جائیں  غیب   سے   یہ   پر  و   بالِ  صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

جلتا   ہے  اس  دیئے  میں  پسینہ   بھی  خون  بھی

تب  جا  کے   ہاتھ   آتے   ہیں   اموالِ   صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

گہنے  تمہارے  تن  پہ   سجیں  حُسنِ   خُلق  کی

پہنو    خدا    کے   فضل    سے   اَغلالِ   صالحہ

                        مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی                       

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

ہر گھر  میں  امن  و  چین  ہو  ہر گھر  میں ہو  سکوں

ہر  گھر  پہ   برکتوں  کے   ہوں  انزالِ   صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

ہرگز   کسی  کا   دل   نہ   دُکھائو   زبان   سے

نکلیں   لبوں  سے  ہر   گھڑی   اقوالِ   صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

سایہ  خدا  کے  پیار  کا  عرؔشی   سروں  پہ   ہو

انفاسِ    قدسیہ     ملیں     اظلالِ     صالحہ

 مائوں   تمہارے  ہاتھ   میں   چابی   بہشت  کی

                           اور  ’’کوڈ  ‘‘  اس  بہشت   کا    اعمالِ    صالحہ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

Rate: 0